شب برآت کی شرعی حیثیت
۱۴ شعبان کو شب براٗت منانے والوں میں شیعہ، سنی بریلوی دیوبندی وغیرہ تقریباً سب ہی شامل ہیں، اور اس رات کا سب سے زیادہ اہتمام ہوتا ہے چنانچہ بدعات کا ارتکاب بھی زیادہ ہی ہوتا ہے۔ ستم ظریفی یہ ہے کہ ان کے ثبوت و جواز کے لیے آیات قرآنی اور احادیث میں تحریف کی جاتی ہے، وہی کام کیا جاتا ہے جس پر یہودیوں کی پکڑ کی گئی ہے یعنی؛

۔۔۔یحرفون الکلم عن مواضعہ۔۔۔(النسأ:۴۶)۔
ترجمہ:۔۔۔کلمات کو ان کی جگہ سے بدل دیتے ہیں۔۔۔